عطا تارڑ کی گرفتاری سے بچنے کی کوششیںکامیاب ہوئیں یا ناکام۔۔۔عدالت نے فیصلہ سنا دیا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک)اسلام آباد ہائیکورٹ نے وزیراعظم شہباز شریف کے معاون خصوصی عطا تارڑ کی حفاظتی ضمانت منظور کر لی۔قائم مقام چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ جسٹس عامر فاروق نے عطا تارڑ کی درخواست پر فیصلہ سناتے ہوئے پولیس کو لیگی رہنما کو گرفتار کرنے سے بھی روک دیا۔

عطا تارڑ نے حفاظتی ضمانت کے لیے اسلام آباد ہائیکورٹ سے رجوع کرتے ہوئے مؤقف اختیار کیا تھا کہ میرے خلاف 25 مئی کو پی ٹی آئی کارکنان پر تشدد کا مقدمہ درج ہے، پولیس نے گرفتاری کے لیے رہائش گاہ پر چھاپا مارا۔وزیراعظم کے معاون خصوصی نے عدالت سے استدعا کی کہ حفاظتی ضمانت منظور کی جائے۔عطا تارڑ نے تھانہ قلعہ گجر سنگھ میں درج مقدمے میں حفاظتی ضمانت کی درخواست دائر تھی۔اسلام آباد ہائیکورٹ نے عطا تارڑ کی درخواست پر فیصلہ سناتے ہوئے 14 روز کے لیے ان کی حفاظتی ضمانت منظور کر لی۔