بد ترین مہنگائی۔۔۔ مگر بیرون ملک موجود پاکستانی بھائیوںنے پاکستانیوں کیلئے اربوںڈالر بھجوا دئیے

کراچی (این این آئی)مہنگائی میں اضافے کے باوجود بیرونِ ملک مقیم پاکستانیوں نے اگست میں 2 ارب 70 کروڑ ڈالر سے زیادہ رقم وطن بھجوائی۔میڈیا رپورٹ کے مطابق اسٹیٹ بینک آف پاکستان (ایس بی پی)نے رپورٹ کیا کہ ملک کو اگست میں 2 ارب 72 کروڑ 40 لاکھ ڈالر موصول ہوئے، جس میں ماہانہ بنیادوں پر تقریبا 8 فیصد اضافہ ہوا تاہم اگست 2021 میں 2 ارب 68 کروڑ 20 لاکھڈالر کے مقابلے میں یہ رقم صرف 1.5 فیصد زیادہ تھی۔اس کے علاوہ جولائی-

اگست میں بیرون ملک مقیم کارکنوں کی طرف سے ترسیلات زر ایک سال قبل 5.418 ارب ڈالر سے 3.2 فیصد کم ہو کر 5.247 ارب ڈالر رہ گئیں۔اس کے علاوہ جولائی-اگست میں بیرونِ ملک مقیم ملازمین کی جانب سے بھیجی گئیں ترسیلات زر ایک سال قبل کے 5 ارب 41 کروڑ 80 لاکھ ڈالر سے 3.2 فیصد کم ہو کر 5 ارب 24 کروڑ 70 لاکھ ڈالر رہ گئیں۔

پاکستان کو مالی سال 2022 میں 31 ارب ڈالر سے زیادہ کی ریکارڈ ترسیلات زر موصول ہوئیں، جو گزشتہ سال کے مقابلے میں 6.1 فیصد زیادہ ہیں تاہم رواں مالی سال کے پہلے مہینے میں براہ راست غیر ملکی سرمایہ کاری (ایف ڈی آئی) میں 43.3 فیصد کی کمی واقع ہوئی۔

جولائی 2020 میں 10 کروڑ 38 لاکھ ڈالر کے مقابلے میں ملک کو ایف ڈی آئی میں صرف 5 کروڑ 89 لاکھ ڈالر مل سکے ہیں۔جولائی میں کرنٹ اکانٹ خسارے میں 45 فیصد کی کمی کے بعد ایک ارب 20 لاکھ ڈالر تک گرنا ڈالر کی آمد کی شدید قلت کا سامنا کرنے والی معیشت کے لیے ایک اچھی علامت ہے۔